انتخابتازہ ترینٹیکنالوجیدنیا

جاپان میں 18 میٹر اونچے روبوٹ کی چہل قدمی نے دنیا کو مسحور کر دیا

ٹوکیو: جاپان کے شہر یوکوہاما میں 18 میٹر اونچے گن دم نامی روبوٹ کی چہل قدمی نے نا صرف سیاحوں کو بلکہ سوشل میڈیا صارفین کو بھی مسحور کر دیا ہے۔

جاپانی فیکٹری یوکوہاما کی جانب سے جاری کی گئی ویڈیو کو 60 لاکھ سے زیادہ مرتبہ دیکھا جا چکا ہے ۔

ویڈیو میں 25 ٹن وزنی روبوٹ کو فیکٹری کے “اسٹوریج ایریا” کے باہر چہل قدمی کرتے دیکھا جا سکتا ہے ۔

چند قدم چلنے کے بعد روبوٹ نے گھٹنوں کے بل بیٹھ کرآسمان کی طرف اشارہ بھی کیا۔

اس سے قبل گن دم لیب کی جانب سے روبوٹ کی نمائش کو کورونا کی وبا کے پیش نظر موخر کر دیا گیا تھا۔

لیب کے مطابق روبوٹ کی دوبارہ نمائش کے لیے ایک تقریب کا اہتمام کیا جائے گا جس میں عوام کو روبوٹ کا معائنہ کرنے کی مکمل اجازت دی جائے گی ۔

واضح رہے کہ گن دم کو معروف جاپانی مانگا ( جاپان کی مزاحیہ اینی میٹڈ کہانیاں) موبائل سوٹ گن دم سے متاثر ہو کر بنایا گیا ہے۔

موبائل سوٹ گن دم کو 1993 سے 2005 تک جاپان میں شائع کیا جاتا رہا ہے جسے بعد ازاں ٹی وی پر بھی ریلیز کیا گیا۔

2000 سے 2003 کے دوران گن دم کے 12 میں سے 9 والیوم ریلیز کیے گئے۔

یاد رہے کہ جاپان میں 70 کی دہائی کی کامک انیم سیریز میں ماڈل کے طور پر استعمال ہونے والے اس 25 ٹن بھاری جاپانی روبوٹ کو کئی سالوں کی کوشش کو بعد دوبارہ متحرک کیا گیا ہے۔

برطانوی اخبار گارڈین کے مطابق انجنئیرز نے اس روبوٹ کو چھ سال قبل اس طرح ڈیزائن کرنا شروع کیا تھا کہ اس کے ایک ایک حصے کا وزن دھیان میں رکھا جائے، تاکہ اس کے پرزے آپس میں ایک دوسرے کے ساتھ جڑ نہ جائیں اور پورے 24 پرزے ٹھیک سے کام کریں۔

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published.

Back to top button