انتخابپاکستانتازہ ترین

1990 سے 2020 تک پاکستان میں 138 صحافی قتل کر دیے گئے

انٹرنیشنل فیڈریشن آف جرنلسٹس (آئی ایف جے) کی جانب سے جاری کردہ ‘عالمی صحافت پر وائٹ پیپر’ میں بتایا گیا ہے کہ 1990 سے 2020 کے دوران پاکستان میں 138 صحافی قتل ہوئے۔

آئی ایف جے کے وائٹ پیپر میں 1990 سے 2020 تک کے دوران قتل ہونے والے صحافیوں کی 13ویں برسی منائی گئی ہے۔ رپورٹ کے مطابق اس عرصے میں دنیا بھر میں 2 ہزار 658 صحافی لائن آف ڈیوٹی میں ہلاک کر دیے گئے۔

وائٹ پیپر میں ‘عملی صحافت کے لیے خطرناک ترین ممالک’ کی فہرست میں پاکستان اور بھارت سمیت 5 ممالک کو شامل کیا گیا ہے۔ عراق 340 صحافیوں کی اموات کے ساتھ خطرناک ترین ممالک میں سرفہرست ہے جبکہ میکسیکو میں 178، فلپائن میں 178، پاکستان میں 138 اور بھارت میں 116 صحافی اپنی زندگیوں سے محروم ہوئے۔

آئی ایف جے کی رپورٹ کے مطابق 15 ممالک میں ٹارگٹ حملوں، دھماکوں اور فائرنگ کے واقعات میں 42 صحافی ہلاک ہوئے۔

2020 میں ملکی درجہ بندی کے لحاظ سے بنائی گئی اس فہرست میں میکسیکو پانچ سالوں میں چوتھی مرتبہ 13 اموات کے ساتھ سرفہرست ہے جبکہ پاکستان، بھارت، افغانستان، عراق اور نائیجیریا میں تین تین ، فلپائن، صومالیہ اور شام میں دو دو ، جبکہ باقی 6 ممالک کیمرون، ہونڈورس، پیراگوئے، روس اور یمن ہیں جہاں ایک ایک صحافی مارا گیا۔

1990 کے بعد سے پاکستان اور بھارت میں بالترتیب 138 اور 116 صحافیوں کا قتل ایشیا پیسیفک کے خطے میں صحافیوں کی کل اموات کا 40 فیصد بنتا ہے۔

رپورٹ میں مزید بتایا گیا ہے کہ عالمی سطح پر قتل ہونے والے صحافیوں کے علاوہ 235 صحافی اپنی نوکریوں کے باعث جیل میں ہیں۔ آئی ایف جے کی یہ رپورٹ انسانی حقوق کے عالمی دن بروز آئندہ جمعرات کو ریلیز کر دی جائے گی۔

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button