Uncategorized

وزیراعظم عمران خان نے اگلے چھ ماہ میں بجلی 5.6 روپے فی یونٹ بڑھانے کی منظوری دے دی

اسلام آباد ( مریم حسین) پاکستانی عوام پر بجلی کا بم گرا دیا گیا۔ وزیراعظم عمران خان نے اگلے چھ ماہ میں بجلی 5.6 روپے فی یونٹ بڑھانے کی منظوری دے دی۔ عوام سے بجلی قیمت بڑھا کر 884 ارب روپے کا ٹیکس اکھٹا کیا جائے گا۔ کابینہ نے ایمرجنسی میں ارڈی ننس کی منظوری دے دی۔ائی ایم ایف کے پاکستان میں ڈائریکٹر نے اس سمری کی ایمرجنسی منظوری کے بعد جس کے تحت بجلی کی قمیتیں بڑھائی جائیں گی اپنے ایک ٹوئیٹ میں خوشی کا اظہار کرتے ہوئے لکھا “پاکستان زندہ باد”۔۔ عمران خان کی کابینہ اس سے پہلے 140 ارب کے ٹیکسز لگانے کی منظوری بھی دے چکی ہے۔ اب بجلی کی قیمت بڑھا کر مزید 884 ارب عوام سے اکھٹے کیے جائیں گے۔ یوں تقریبا بجلی کی قیمت اور دیگر ٹیکسوں کی مد میں ایک ہزار ارب سے زائد پیسہ عوام سے اکھٹا کیا جائے گا۔ تفصیلات کے مطابق ائی ایم ایف سے پانچ سو ملین ڈالرز کی قسط ریلز کرانے کے لیے جمعہ کے روز کابینہ سے سرکولیشن کے زریعے ایک سمری کی منظوری لی گئی۔ اب اس سمری کی منظوری کے بعد فوری طور پر آرڈی ننسن جاری کیا جائے گا تاکہ ائی ایم ایف کی شرائط پوری کی جائیں۔ تفصیلات کے مطابق بجلی کی قمیت مرحلہ وار بڑھائی جائے تاکہ لوگوں کو اچانک ساڑھے پانچ روپے فی یونٹ قمیت بڑھنے پر دھچکا نہ لگے۔ اپریل سے اکتوبر تک عوام سے 884 ارب اکھٹے کرنے کا پروگرام ہے۔اکانومک رپورٹر شہباز رانا کی رپورٹ میں انکشاف کیا گیا ہے اب بجلی کی قیمت بڑھانے کا اختیار بھی نیپیرا کو دے دیا گیا ہے۔ اگر حکومت پندرہ دن تک قیمت نہیں بڑھائے گی تو نیپرا اسے خود بڑھا سکے گا۔

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published.

Back to top button