Uncategorized

ہماری معاشی ترقی سے مخالفین بھی حیران پریشان ہیں ، عمران خان کا بیان

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک )وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ ہماری معاشی ترقی سے مخالفین بھی حیران و پریشان ہیں،اللہ کا شکر ہے ہم مشکل وقت سے نکل آئے ہیں اور معیشت مستحکم ہوگئی ہے ،مخالفین کہتے ہیں کہ چار فیصد گروتھ ریٹ ایک دم نہیں بڑھتی حکومت جھوٹ بول رہی ہے ،مخالفین کو بتا دینا چاہتا ہوں کہ ہم نیوٹرل امپائرز کیساتھ حکومت میں آئے دھاندلی کی پیداوار نہیں ۔رشکئی خصوصی اقتصادی زون کے کمرشل لانچ کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ فیوچر پاکستان انڈسٹریز کے مستقبل میں ہے انڈسٹریز کو ترقی دیئے بغیر ملکی ترقی نہیں ہوسکتی ،رشکئی خصوصی اقتصادی زون سی پیک کا حصہ ہے ، اگر آج دنیا میں چین سب سے تیزی سے ترقی کررہاہے ،مغرب انڈسٹریلازیشن پرانی طرز کی ہے

جبکہ چین کی انڈسٹریلازیشن جدید ہے ہمیں چین سے سیکھنا ہو گا ۔اگر انڈسٹری مہنگی زمین خریدے گی تو اس کو نفع نہیں ہوگا اس لئے مہنگی زمینیں انڈسٹریلازیشن میں بڑی رکاوٹ ہیں اس لئے ہمیں اس پر بھی توجہ دینا ہوگی ۔ہمارا مسئلہ یہ ہے کہ پچھلے پچاس سال کے دوران پاکستان کی انڈسٹریز بہت تیزی سے ترقی کررہاہے اور انڈسٹریز بھی لگ رہی تھی لیکن بعد میں اس پر توجہ نہیں دی گئی ۔انہوں نے کہاکہ اگر ہم صرف اپنی اجناس فروخت کریں گے تو اس سے پاکستان ترقی نہیں کرے گا بلکہ ہمیں ایکسپورٹ پر بھی توجہ دینی ہوگی ،پاکستان میں برآمدات پر توجہ دینے کے لئے انڈسٹریز لگانی ہو گی اوراسے ترقی دینا ہو گی ۔جب تک برآمدات میں اضافہ نہیں ہوگا پاکستان ترقی نہیں کرے گا، چین کی برآمدات میں اضافے انڈسٹریز لگانے سے ہوا ۔

انہوں نے کہاکہ ہم بدقسمتی سے ہم نے انڈسٹریز کے لئے آسانیاں پیدا نہیں کیں تاہم موجودہ حکومت انڈسٹریز کیلئے آسانیاں پیدا کررہی ہے کیونکہ یہ کام گورنمنٹ ہے کہ وہ انڈسٹریز کیلئے آسانیاں پیدا کرے ۔ہم پوری کوشش کررہے ہیں کہ انویسٹر باہر جانے کی بجائے ہمارے ملک کے اندر رہیں اور باہر سے بھی انویسٹر ز پاکستان آئیں کیونکہ صنعتیں لگانے سے ملک کی ترقی بڑھتی ہے ، عوام خوشحال ہوتے ہیں ۔انہوں نے کہاکہ ڈھائی سال پہلے ہمارے پاس فارن ریزرو ایکسچینج میں اتنا پیسہ نہیں تھا کہ ہم قرضے ادا کرسکیں ، ہم نے بڑی مشکل سے وقت گزارا ۔چین ، سعودی عرب اور یوای اے ہمیں سپورٹ نہ کرسکتے تو پاکستان دیوالیہ ہوجاتا ، جب روپیہ گرتا ہے تو سب چیزیں مہنگی ہوجاتی ہیں ، بجلی ، پٹرول، تیل دالیں ، گھی سب کچھ مہنگا ہوجاتا ہےاور ملک میں غربت پیدا ہوجاتی ہے

اللہ کا شکر ہے کہ ہم مشکل وقت سے نکل آئے ہیں اور اپنی معیشت کو مستحکم کردیا ہے ۔انہوں نے کہاکہ میری زندگی کا سب سے مشکل وقت ڈیڑھ سال تھا جب میں نے حکومت سنبھالی۔ہمیں اللہ سے دعا کرنی چاہیے کہ جس طرح ہم کرونا سے نکلے ہیں کوئی دوسرا ملک نہیں نکلا ۔ہم نے سب سے بڑا فیصلہ کیا کہ ہم نے لاک ڈائون نہیں لگانا کیونکہ لاک ڈائون سے غربت پیدا ہوتی ہے ،امیر ملک لاک ڈائون سے کچلے گئے ۔اگر پریشر میں آکر میں بھی لاک ڈائون لگا دیتا توہمارا وہ حال ہونا تھا جوآج بھارت کا ہے ۔سمارٹ لاک ڈائون پالیسی سے ہم نے اپنے ملک و عوام کو بچا لیا ہے ۔انہوں نے کہا کہ آج ہمارے مخالفین بھی پریشان ہیں کہ ایک دم چارفیصد گروتھ ریٹ کیسے بڑھ گئی ،ہمارے مخالفین اتنے حیران ہیں کہ وہ کہہ رہے ہیں حکومت جھوٹ بول رہی ہے ،چارپرسنٹ گروتھ ہو ہی نہیں سکتی ۔انہوں نے کہاکہ مخالفین کو بتانا چاہتا ہوں کہ میں نیوٹرل امپائر کیساتھ حکومت میں آیا ہوں ہم دھاندلی کے ساتھ نہیں آئے ۔

Related Articles

One Comment

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button